محبت کا جب بھی تم حال لکھنا۔۔

محبت کا جب بھی تم حال لکھنا۔۔

لازم ہے کہ میرا بھی زوال لکھنا۔۔

تم لکھنا خود کو گلشن گلستاں۔۔

مجھ کو تم کانٹے سی مثال لکھنا۔۔

جو لکھو تو اپنی دل لگی کا ذکر کرنا۔۔

عشق کو میرےتم لازوال لکھنا۔۔

نہیں سر لینا تم اپنے الزام کوئی۔۔

بچھڑنے کو وقت کی کوئی چال لکھنا۔۔

جو لکھو ذکر اپنا تو عروج لکھنا۔۔

ہستی کو میری تم لازوال لکھنا۔۔

خود کو تم لکھنا صبحِ بہاراں۔۔

مجھ کو تم شامِ ملال لکھنا۔۔

تم لکھو تو لکھنا بہت عام تھا میں۔۔

قسم ہے خود کو تم بے مثال لکھنا۔۔

پڑھ کر کریں سب ہی اِس توبہ۔۔

تم عشق کے کچھ ایسے احوال لکھنا۔۔

بنا دینا کاغذ پہ تم میری آنکھیں۔۔

جب ہو جائے تم سے محال لکھنا۔۔

اسی کے متعلق مزید شعر

Copyright 2020 | Anzik Writers