گونج آتی رہے گی ارض وسما سے جمال کے سا تھ

گونج آتی رہے گی ارض وسما سے جمال کے سا تھ

پکارتے رہے گے بحروبر نا مِ محمد کمال کے سا تھ

حاضر ہوتے تھے ا دب سے شجر دامنِ مصطفی میں

بولتے تھے حجر بھی یا مصطفی بلال کے سا تھ

خدا بھیجتار ہے گا درودو سلام نذیروبشیر پر

مناتے رہے گے فرشتے بذم ِ مصطفی لازوال کے سا تھ

آمد ہو تی رہے گی ثقلین کی دربارِمصطفی میں

پکارتے تھے بے زبان بھی یا مجتبی استقلال کے سا تھ

دور ہوگیےٴ میرے رنج وبلا آمدِ مصطفی سے

سجاتے رہے گے غلام محفلِ مصطفی اقبال کے سا تھ

اسی کے متعلق مزید شعر

Copyright 2020 | Anzik Writers