کوئی عشق میں مجھ سے افزوں نہ نکلا

کوئی عشق میں مجھ سے افزوں نہ نکلا کبھی سامنے ہو کے مجنوں نہ نکلا بڑا شور سنتے تھے پہلو میں دل کا جو چیرا تو اک قطرہ خوں نہ نکلا بجا کہتے آئے ہیں ہیچ اس کو شاعر کمر کا کوئی ہم سے مضموں نہ نکلا ہوا کون سا روز روشن نہ کالا کب […]

 مزید پڑھیں

آئنہ سینۂ صاحب نظراں ہے کہ جو تھا

آئنہ سینۂ صاحب نظراں ہے کہ جو تھا چہرۂ شاہد مقصود عیاں ہے کہ جو تھا عشق گل میں وہی بلبل کا فغاں ہے کہ جو تھا پرتو مہ سے وہی حال کتاں ہے کہ جو تھا عالم حسن خدا داد بتاں ہے کہ جو تھا ناز و انداز بلائے دل و جاں ہے کہ […]

 مزید پڑھیں

میں نے عریاں تجھے اے رشک قمر دیکھ لیا

میں نے عریاں تجھے اے رشک قمر دیکھ لیا دیدہ و دل کو جو تھا مد نظر دیکھ لیا نزع میں یار نے صورت نہ دکھائی مجھ کو دشمن و دوست کو ہنگام سفر دیکھ لیا لے گئی وحشت دل گور غریباں کی طف ہم نے یاران گزشتہ کا بھی گھر دیکھ لیا خوں کیا […]

 مزید پڑھیں

آئنہ سینۂ صاحب نظراں ہے کہ جو تھا

آئنہ سینۂ صاحب نظراں ہے کہ جو تھا چہرۂ شاہد مقصود عیاں ہے کہ جو تھا عشق گل میں وہی بلبل کا فغاں ہے کہ جو تھا پرتو مہ سے وہی حال کتاں ہے کہ جو تھا عالم حسن خدا داد بتاں ہے کہ جو تھا ناز و انداز بلائے دل و جاں ہے کہ […]

 مزید پڑھیں
Copyright 2020 | Anzik Writers