زحال مسکیں مکن تغافل دورائے نیناں بنائے بتیاں

زحال مسکیں مکن تغافل دورائے نیناں بنائے بتیاں کہ تاب ہجراں ندارم اے جاں نہ لیہو کاہے لگائے چھتیاں شبان ہجراں دراز چوں زلف و روز وصلت چوں عمر کوتاہ سکھی پیا کو جو میں نہ دیکھوں تو کیسے کاٹوں اندھیری رتیاں یکایک از دل دو چشم جادو بصد فریبم بہ برد تسکیں کسے پڑی […]

 مزید پڑھیں

ہر حرف ہے سرمستی، ہر بات ہے رندانہ

ہر حرف ہے سرمستی، ہر بات ہے رندانہ چھائی ہے مرے دل پر وہ نرگسِ مستانہ وہ اشک بہے غم میں یہ جاں ہوئی غرقِ خوں لبریز ہوا آخر یوں عمر کا پیمانہ آ ڈال مرے دل میں زلفوں کے یہ پیچ و خم آشفتہ سروں کا ہے آباد سیہ خانہ واللہ کشش کیا تھی […]

 مزید پڑھیں

بہ خوبی ھمچومہ تابندہ باشی

بہ خوبی ھمچومہ تابندہ باشی بہ ملک دلبری پاینده باشی من درویش را کشتی بہ غمزہ کرم کردى الٰہی زندہ باشی جہاں سوزى اگر در غمزہ آىى شکر ریزی اگر در خندہ باشی ز قید دو جہاں آزاد گشتم اگر تو ھم نشینِ بندہ باشى جفا کم کن کہ فردا روزِ محشر زروی عاشقان شرمندہ […]

 مزید پڑھیں
Copyright 2020 | Anzik Writers