بھولے بسرے موسموں کے درمیاں رہتا ہوں میں

بھولے بسرے موسموں کے درمیاں رہتا ہوں میں اب جہاں کوئی نہیں وہاں رہتا ہوں میں دن ڈھلے کرتا ہوں بوڑھی ہڈیوں سے ساز باز جب تلک شب ڈھل نہیں جاتی جواں رہتا ہوں میں کیا خبر ان کو بھی آتا ہو کبھی میرا خیال کن ملالوں میں ہوں کیسا ہوں کہاں رہتا ہوں میں […]

 مزید پڑھیں

ڈھب ہیں تیرے سے باغ میں گل کے

ڈھب ہیں تیرے سے باغ میں گل کے بو گئی کچھ دماغ میں گل کے جائے روغن دیا کرے ہے عشق خون بلبل چراغ میں گل کے دل تسلی نہیں صبا ورنہ جلوے سب ہیں گے داغ میں گل کے اس حدیقے کے عیش پر مت جا مے نہیں ہے ایاغ میں گل کے سیر […]

 مزید پڑھیں

اس کے کوچے سے جو اٹھ اہل وفا جاتے ہیں

اس کے کوچے سے جو اٹھ اہل وفا جاتے ہیں تا نظر کام کرے رو بقفا جاتے ہیں متصل روتے ہی رہیے تو بجھے آتش دل ایک دو آنسو تو اور آگ لگا جاتے ہیں وقت خوش ان کا جو ہم بزم ہیں تیرے ہم تو در و دیوار کو احوال سنا جاتے ہیں جائے […]

 مزید پڑھیں

الٹی ہو گئیں سب تدبیریں کچھ نہ دوا نے کام کیا

الٹی ہو گئیں سب تدبیریں کچھ نہ دوا نے کام کیا دیکھا اس بیماری دل نے آخر کام تمام کیا عہد جوانی رو رو کاٹا پیری میں لیں آنکھیں موند یعنی رات بہت تھے جاگے صبح ہوئی آرام کیا حرف نہیں جاں بخشی میں اس کی خوبی اپنی قسمت کی ہم سے جو پہلے کہہ […]

 مزید پڑھیں

Ulti Ho Ga.Iin Sab Tadbiren Kuchh Na Dava Ne Kaam Kiya

Ulti Ho Ga.Iin Sab Tadbiren Kuchh Na Dava Ne Kaam Kiya Dekha Is Bimari-E-Dil Ne Akhir Kaam Tamam Kiya Ahd-E-Javani Ro Ro Kaata Piiri Men Liin Ankhen Muund Ya.Ani Raat Bahut The Jaage Sub.H Hui Aram Kiya Harf Nahin Jan-Bakhshi Men Us Ki Khubi Apni Qismat Ki Ham Se Jo Pahle Kah Bheja So Marne […]

 مزید پڑھیں

Dekh To Dil Ki Jaan Se Uthta Hai

Dekh To Dil Ki Jaan Se Uthta Hai Ye Dhuan Sa Kahan Se Uthta Hai Gor Kis Diljale Ki Hai Ye Falak Shola Ik Sub.H Yaan Se Uthta Hai Khana-E-Dil Se Zinhar Na Ja Koi Aise Makan Se Uthta Hai Naala Sar Khinchta Hai Jab Mera Shor Ik Asman Se Uthta Hai LaḌti Hai Us […]

 مزید پڑھیں
Copyright 2020 | Anzik Writers