محبت

دیکھ تیری دیوانگی میں کیا کر بیٹھے
تجھے بھولتے بھولتے خود کو بھول بیٹھے

رکھیں گے سنبھال کر
تیری یادیں تیری باتیں

محبت کرنے چلے تھے ہم
صاحب بے وفا کہلائے گۓ ہیں

لاکھ کوششوں کے باوجود
محبت خاک ہو گئی میری

تیرے کہنے پہ رابطہ ختم کیا
پھر بھی بے وفا ہم۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟

بلا وجہ چھوڑا ہے تم نے
بتاؤ سکون مل۔۔۔۔۔۔۔؟

اس نے وقت گزارا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اور میں محبت سمجھ بیٹھی

ایک ملاقات رکھتے ہیں
تم میں اور چائے۔۔۔۔۔۔۔۔

وہ کھیلتا رہا مجھ سے صاحب
اور میں تماشہ دیکھتا رہا۔۔۔۔

اس نے کہا بھول جاؤ مجھے
میں نے کہا انتظار کرو میری سانسیں رکنے کا

اسی کے متعلق مزید شعر

Copyright 2020 | Anzik Writers